جمعہ کا دن یا شب جمعہ سورۂ الدخان کی تلاوت کرنا – ضعیف احادیث

جمعہ کا دن یا شب جمعہ سورۂ الدخان کی تلاوت کرنا – ضعیف احادیث
زیادہ سے زیادہ شیئر کریں......Share on StumbleUponShare on LinkedInShare on TumblrPin on PinterestShare on Google+Share on RedditTweet about this on TwitterShare on Facebook

جمعہ کی فضیلت کی احادیث میں سے ایک  شب جمعہ یا جمعہ کے دن سورۂ الدخان پڑھنے کے حوالے سے پیش کی جاتی ہے ، جس کی تحقیق درج ذیل ہے:

شب جمعہ اور جمعہ کے دن سورهٔ الدخان پڑھنے کی فضیلت

من قرأ حم الدخان في لیلة الجمعة أو یوم الجمعة بنی اللہ له بیتا فی الجنة

” جس نے شب جمعہ یا جمعہ کے دن سورهٔ حم الدخان کی تلاوت کی اللہ تعالیٰ اس کے لیے جنت میں گھر بنائیں گے۔ “

(المعجم الکبیر: ۲۶۴/۸، حدیث: ۸۰۲۶)

سخت ضعیف:  جمعہ کی فضیلت کی یہ روایت سخت ضعیف ہے:

٭ امام ہیثمی رحمہ اللہ نے فرمایا ہے کہ اس میں فضال بن جبیر  راوی ” بہت زیادہ ضعیف “ ہے۔ (مجمع الزوائد: ۳۰۱۷)

٭محدث العصر علامہ البانی رحمہ اللہ نے اس کو سخت ضعیف روایت کہا ہے۔ (ضعیف الترغیب، ۴۴۹، ضعیف الجامع الصغیر: ۵۷۶۸، سلسلة الأحادیث الضعیفة: ۵۱۱۲)

دوسری روایت:

شبِ جمعہ سورۂ الدخان کی تلاوت

مَنْ قَرَأَ ﴿حٰم ﴾الدُّخَانَ فِي لَيْلَةِ الْجُمُعَةِ غُفِرَ لَهُ

” جو شخص شب جمعہ کو سورۂ دخان کی تلاوت کرتا ہے تو اسے بخش دیا جاتا ہے۔ “

(ترمذی: ۲۸۸۹)

سخت ضعیف: یہ روایت سخت ضعیف ہے، کیونکہ:

۱: اس کا راوی ہشام بن زیاد أبو المقدام "متروک” ہے۔ (تقریب التہذیب: ۷۲۹۲)

٭امام ترمذی رحمہ اللہ فرماتے ہیں: ” ہشام ابو المقدام کو ضعیف قرار دیا گیا ہے۔”

٭ شیخ البانی رحمہ اللہ نے اس روایت کو ضعیف کہا ہے۔ (الضعيفة : 4632، المشكاة : 2150 /التحقيق الثاني، ضعيف الجامع الصغير :5767)

٭مزید دیکھئے: الفوائد المجموعة (ص۳۰۲) اور اللآلی المصنوعة (۲۱۵/۱)

Related Posts
Leave a reply