جمعہ کا دن یا شب جمعہ سورۂ الدخان کی تلاوت کرنا – ضعیف احادیث

جمعہ کا دن یا شب جمعہ سورۂ الدخان کی تلاوت کرنا – ضعیف احادیث

جمعہ کی فضیلت کی احادیث میں سے ایک  شب جمعہ یا جمعہ کے دن سورۂ الدخان پڑھنے کے حوالے سے پیش کی جاتی ہے ، جس کی تحقیق درج ذیل ہے:

شب جمعہ اور جمعہ کے دن سورهٔ الدخان پڑھنے کی فضیلت

من قرأ حم الدخان في لیلة الجمعة أو یوم الجمعة بنی اللہ له بیتا فی الجنة

” جس نے شب جمعہ یا جمعہ کے دن سورهٔ حم الدخان کی تلاوت کی اللہ تعالیٰ اس کے لیے جنت میں گھر بنائیں گے۔ “

(المعجم الکبیر: ۲۶۴/۸، حدیث: ۸۰۲۶)

سخت ضعیف:  جمعہ کی فضیلت کی یہ روایت سخت ضعیف ہے:

٭ امام ہیثمی رحمہ اللہ نے فرمایا ہے کہ اس میں فضال بن جبیر  راوی ” بہت زیادہ ضعیف “ ہے۔ (مجمع الزوائد: ۳۰۱۷)

٭محدث العصر علامہ البانی رحمہ اللہ نے اس کو سخت ضعیف روایت کہا ہے۔ (ضعیف الترغیب، ۴۴۹، ضعیف الجامع الصغیر: ۵۷۶۸، سلسلة الأحادیث الضعیفة: ۵۱۱۲)

دوسری روایت:

شبِ جمعہ سورۂ الدخان کی تلاوت

مَنْ قَرَأَ ﴿حٰم ﴾الدُّخَانَ فِي لَيْلَةِ الْجُمُعَةِ غُفِرَ لَهُ

” جو شخص شب جمعہ کو سورۂ دخان کی تلاوت کرتا ہے تو اسے بخش دیا جاتا ہے۔ “

(ترمذی: ۲۸۸۹)

سخت ضعیف: یہ روایت سخت ضعیف ہے، کیونکہ:

۱: اس کا راوی ہشام بن زیاد أبو المقدام "متروک” ہے۔ (تقریب التہذیب: ۷۲۹۲)

٭امام ترمذی رحمہ اللہ فرماتے ہیں: ” ہشام ابو المقدام کو ضعیف قرار دیا گیا ہے۔”

٭ شیخ البانی رحمہ اللہ نے اس روایت کو ضعیف کہا ہے۔ (الضعيفة : 4632، المشكاة : 2150 /التحقيق الثاني، ضعيف الجامع الصغير :5767)

٭مزید دیکھئے: الفوائد المجموعة (ص۳۰۲) اور اللآلی المصنوعة (۲۱۵/۱)

Related Posts
Leave a reply