تراویح کی مسنون رکعات آٹھ یا بیس؟ – ھائی ریزولیوشن پوسٹر

تراویح کی مسنون رکعات آٹھ یا بیس؟ – ھائی ریزولیوشن پوسٹر

حرم میں آٹھ سے زائد تراویح اور اصل نکتہ اختلاف

اکثر لوگ آٹھ یا بیس تراویح میں اصل نکتہ اختلاف کو ہی سمجھ نہیں پاتے, جس بنا پر بہت الجھن پیدا ہو جاتی ہے.

اہل حدیث کا موقف یہ ہے کہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم اور صحابہ کرام سے تراویح کی بمع وتر گیارہ ہی رکعت ثابت ہیں. چنانچہ مسنون یا سنت موکدہ بمع وتر گیارہ ہی رکعت ہوئیں.

اس کے ساتھ ساتھ چونکہ رات کو نوافل پڑھنے کی کوئی تعداد معین نہیں کی گئی, جس سے زائد پڑھنا مکروہ یا حرام ہو, لہذا گیارہ سے زائد پڑھنا جائز ہے.

لیکن اصل ظلم یہ ہے کہ بیس کی معین تعداد کو سنت موکدہ کہا جاتا ہے, جو کہ سراسر جھوٹ ہے, جس کی بنیاد بھی جھوٹی روایات پر ہے. ہم اسی جھوٹ کو ختم کرنا چاہتے ہیں.

حرم میں گیارہ سے زائد پڑھی جاتی ہیں, لیکن صرف بیس نہیں, آپ اگر آخری عشرے میں وہاں جائیں تو رات کے آخری پہر پھر سے قیام ہوتا ہے, یوں بیس سے تیس اور چالیس تک بھی رکعات پڑھی جاتی ہیں…

بعینہ یہی عمل ہمارے پاکستان میں بہت سی اہل حدیث مساجد میں بھی آخری عشرے میں ہوتا ہے کہ آٹھ تراویح کے بعد آٹھ دس اور بھی آخری رات میں باجماعت پڑھی جاتی ہیں. لیکن ہم یا سعودیہ والے قطعا اسے سنت موکدہ نہیں کہتے, کیونکہ خود باعتراف احناف علماء نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم سے بیس کی تعداد بالکل ثابت نہیں, بل کہ اس سلسلے میں صرف دو مرفوع روایات ہیں, وہ دونوں جھوٹی ہیں.

اگر احناف احباب بیس تراویح کو سنت موکدہ کہنا اور سمجھنا چھوڑ دیں تو وہ بیس پڑھیں یا چالیس, ہمیں ان سے کوئی اختلاف نہیں…

اب فیصلہ احناف بھائیوں کے ہاتھ میں ہے کہ وہ بیس رکعت کے مسنون ہونے والی روایات کے جھوٹا ہونے پر اپنے علماء کے اعترافات کے باوجود بھی بیس تراویح کو سنت موکدہ کہنا چھوڑتے ہیں یا نہیں!

تراویح کی مسنون رکعات ۔۔۔۔۔۔۔ ہائی ریزولیوشن پوسٹر

تراویح کی مسنون رکعات ہائی ریزولیوشن امیج, تراویح کی رکعت آٹھ یا بیس؟

یہ پوسٹر اس ویب سائیٹ سے لیا گیا ہے: http://mazameen.ahlesunnatpk.com

Zaeef Hadith

عوام اور خواص میں بدعات، باطل عقائد اور نظریات پھیلانے کا سبب بننے والی مشھور ضعیف، موضوع (من گھڑت)، بے سند اور بے اصل روایات، واقعات اور اقوال سے باخبر رکھنے کیلئے سب بہترین ویب سائیٹ۔

ہمارا فیس بک پیج ضرور لائیک کریں۔

جزکم اللہ خیراً

Related Posts
Leave a reply