• Home
  • دعا سے متعلق
  • ایامِ عید کی تکبیرات کے سلسلے میں کونسے الفاظ پڑھنے بہتر ہیں؟
تکبیرات عیدین کے الفاظ

ایامِ عید کی تکبیرات کے سلسلے میں کونسے الفاظ پڑھنے بہتر ہیں؟

عشرہ ذی الحجہ میں کیے گئے عمل سے زیادہ پاکیزہ اوزیادہ اجروالا عمل کوئی نہیں ۔ ذوالحجہ کےیہ پہلے دس دن باقی سال کے سب ایام سے بہتر اورافضل ہیں۔ ان دس ایام میں مساجد ، راستوں اورگھروں اورہر جگہ جہاں اللہ تعالی کا ذکر کرنا جائز ہے وہیں اونچی آواز سے تکبیریں اورلاالہ الااللہ ، اورالحمدللہ کہنا چاہیے تا کہ اللہ تعالی کی عبادت کا اظہار اوراللہ تعالی کی تعظیم کا اعلان ہو ۔ 

تکبیرات کے سلسلے میں مختلف روایت میں مختلف الفاظ ملتے ہیں، ان میں سے چند ذیل میں ملاحظہ فرمائیں:

عیدین کی تکبیرات کے الفا ظ

ایک رویت میں آیا ہے کہ نبی ﷺ ایام عید کی تکبیروں میں درج ذیل کلمات کہتے تھے:

” اللہ أکبر اللہ أکبر اللہ أکبر، لا إلٰه إلا اللہ، واللہ أکبر، اللہ أکبر ، وللہ الحمد”

(سنن الدارقطنی: ج۲ص۴۹ح۱۷۲۱)

موضوع (من گھڑت): اس روایت کی سند موضوع ہے۔

* اس کا راوی عمرد بن شمر”کذاب“ہے۔

*  اس کا دوسرا راوی جابر الجعفی ”سخت ضعیف رافضی“ ہے

* اسی طرح نائل بن نجیح ”ضعیف راوی“ ہے۔

 

تکبیرات عیدین کے صحیح ثابت الفاظ

تکبیرات عیدین کے الفاظ نبی کریم ﷺ سے ثابت نہیں لیکن صحابہ کرام رضی اللہ عنہم اور تابعین عظام رحمہم اللہ سےتکبیرات کے درج ذیل الفاظ ثابت ہیں:

*عبد اللہ بن عباس رضی اللہ عنہما تکبیرات عیدین میں درج ذیل الفاظ ہڑھتے تھے۔

”اللہ أکبر کبیرًا اللہ أکبر کبیرًا ، اللہ أکبر وأجل، اللہ أکبر وللہ الحمد“

(مصنف ابن ابی شیبہ: ۱۶۷/۲ح۵۶۵۰)

* سیدنا سلمان الفارسی رضی اللہ عنہ یہ الفاظ پڑھتے تھے:

”اللہ أکبر اللہ أکبر اللہ أکبر“

(مصنف عبد الرزاق : ۲۹۴/۱۱ح۲۰۵۸۱، والبیہقی:۳۱۶/۳، وسندہ حسن)

* ابراہیم النخعی رحمہ اللہ سے درج ذیل الفاظ ثابت ہیں:

”اللہ أکبر اللہ أکبر، لاإلٰه إلا اللہ ، واللہ أکبر، اللہ أکبر، وللہ الحمد“

(مصنف ابن ابی شیبہ: ج۲ص۱۶۷ح۵۶۴۹، وسندہ صحیح)

درج بالا تکبیرات صحابہ و تابعین سے ثابت ہیں لہٰذا ایام عیدین میں انھیں پڑھنے میں کوئی حرج نہیں بلکہ اقتداءبالسلف کی رو سے ثواب کی امید ہے۔ والحمد اللہ

ایام عید کی تکبیرات کے وقت کے سلسلے میں اس لنک میں پڑھیں: mazameen.ahlesunnatpk.com

LEAVE YOUR COMMENTS