جس چیز کو نبی کریم ہاتھ لگاتے اس پر آگ حرام ہوجاتی

جس چیز کو نبی کریم ﷺ ہاتھ لگاتے اس پر آگ حرام ہوجاتی!

سوشل میڈیا پر ایک روایت صحیح بخاری کے حوالے سے  گردش کر رہی ہے کہ جس چیز کو نبی کریم ﷺ ہاتھ لگاتے اسے آگ کبھی نہیں جلاتی تھی، لیکن یہ روایت من گھڑت ہے۔ اس روایت کا متن کچھ اس طرح ہے :

” ایک بار حضرت فاطمہ رضی اللہ عنہا تندور پر روٹیاں لگا رہی تھیں، نبی کریم محمد مصطفے ﷺ پاس کھڑے دیکھ کر مسکرا رہے تھے، پھر سرکار دوجہاں ﷺ نے فرمایا لائیں ایک روٹی میں بھی لگا دوں آقا نے روٹی لگائی شہزادی حضرت فاطمہ رضی اللہ عنہا نے فرمایا بابا جان روٹی تو پک ہی نہیں رہی سرکار ﷺ مسکرائے اور بولے جس چیز کو میرا ہاتھ لگ جائے اس پر آگ اثر نہیں کرتی.“

 

تبصرہ:  یہ بے اصل اور من گھڑت واقعہ ہے.صحیح بخاری کی  طرف اسے منسوب کرنا جسارت ہے۔

* تاریخ بغداد ۲۹۱/۱۰ میں رسول اللہﷺ  کے رومال کے نہ جلنے کا ذکر ہے مگر وه بھی سخت ضعیف ہے.

۱: دینار دجال، منکر الحدیث، ذاھب اور جھوٹا مدعی ہ سماع ے۔

۲: ابن نصر مجھول ہے

۳: ابو عمیر الانسی بھی ضعیف ہے.

ایکی من گھڑت روایت

 

LEAVE YOUR COMMENTS