جس چیز کو نبی کریم ہاتھ لگاتے اس پر آگ حرام ہوجاتی

سوشل میڈیا پر ایک روایت صحیح بخاری کے حوالے سے  گردش کر رہی ہے کہ جس چیز کو نبی کریم ﷺ ہاتھ لگاتے اسے آگ کبھی نہیں جلاتی تھی، لیکن یہ روایت من گھڑت ہے۔ اس روایت کا متن ک

امام ابو حنیفہ اس امت کے چراغ ہیں

امام اعظم محمد رسول اللہ ﷺ کی احادیثِ مبارکہ ہوں یا آپ ﷺ کے فضائل و مناقب ، صحابہ کرام رضی اللہ عنہم کے آثار ہوں یا ان ہستیوں کے فضائل و مناقب ہوں، صرف صحیح اور حسن روی

مُردوں کا دیکھنا اور سلام سننا، قبر والوں کا دیکھنا، قبر والوں کا سننا

مردوں کا دیکھنا اور سلام سننا قبر والے نہ زندوں کا سلام سنتے نہ انہیں دیکھتے پہچانتے ہیں۔بعض اہل علم کا یہ کہنا کہ مردے زندوں کا سلام سنتے ہیں اور زائرین کو دیکھتے و

علم غیب، نبی کریم ﷺ پر امت پیش کی گئی، علیم غیب سے متعلق جھوٹی روایت

اسماعیل بن عبد الرحمٰن بن سدی رحمہ اللہ بیان کرتے ہیں کہ رسول اللہ نے فرمایا: ”مجھ پر میری امت اپنے خمیر کی صورت میں پیش کی گئی، جیسا کہ سیدنا آدم علیہ السلام پر پیش ک

نبی کریم ﷺ کا رات میں دن کی طرح دیکھنا، معجزات نبی کریم ﷺ، ضعیف احادیث

سیدنا عبداللہ بن عباس رضی اللہ عنہما بیان کرتے ہیں: کَانَ رَسُولُ اللہِ ﷺ یَرٰی بِاللّیلِ فِي الظُّلمَةِ کَمَا یَرٰی بِالنَّھَارِ مِنَ الضَّوءِ ”رسول اللہ ﷺ رات

ظل نبی ﷺ ،سایہ مبارک، رسول اللہ ﷺ کا سایہ، موضوع احادیث، من گھڑت احادیث

نبی کریم ﷺ کا سایہ نہیں تھا! ایک روایت میں آتا ہے کہ: أنّ رسول اللہ صلی اللہ علیه وسلم لم یکن یُریٰ له ظلّ فی شمس ولا قمر ”نبی کریم ﷺ کا سایہ نہ سورج کی روشنی میں نظر آ

رسول اللہ ﷺ کا سایہ مبارک، فتاوی علمیہ، شیخ زبیر علی زئی رحمہ اللہ، ضعیف احادیث

کم علم خطباء اور اہل بدعت کی جانب سے ایک روایت عوام میں بہت مشہور کی گئی کہ نبی کریم ﷺ کا سایہ مبارک نہ تو سورج کی روشنی میں دکھتا تھا اور نہ ہی چاند کی چاندنی میں لیکن